شمربن ذالجوشن شیعہ یا سنی ؟


شمربن ذالجوشن شیعہ یا سنی ؟

اس کم ظرف لعنتی شخص نے نواسہ ِرسول کے پاک گلے پر خنجر چلایا تھا۔ لیکن پھر ہم جب سپاہ ِصحابہ کے نواصب کو دیکھتے ہیں جو شمر بن ذالجوشن کو شیعہ ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں، تو ہم نے چاہا کہ اس سازش کو بھی ناکام بنا دیا جائے
ناصبیوں کا اعتراض:
 "" جس شخص نے سیدنا حسین کو قتل کیا اس کا نام شمر بن ذالجوشن تھا اور وہ شیعہ تھا جیسا کہ سنی و شیعہ کتابوں میں لکھا ہے۔ شمر شیعہ کا حصہ تھا لیکن پھر اس نے سیدنا حسین کو چھوڑدیا اور یزید کے آدمیوں سے جا ملا۔ اس امر کا پختہ ثبوت دینے کے لئے (کہ شمر شیعہ تھا)، ہم حوالہ دیتے ہیں مستند اور مایا ناز شیعہ عالم دین قمی کا۔ قمی جو کہ مشہور کتاب 'مفاتح الجنان' کے مصنف ہیں اپنی کتاب میں لکھتے ہیں:
'میں کہتا ہوں کہ شمر صفین کے روز امیر المومنین کی فوج میں تھا'۔ (القمی، صفینۃ النجات، ج 4 ص 492 ) """

جواب نمبر 1:

 37 ھجری میں ہر وہ شخص جو حضرت علی کو جائز خلیفہ تسلیم کرتا اور ان کے دشمنوں سے لڑا وہ 'شیعہ' ہی کہلایا جاتا

اگر ناصبی مصنف کا مضمون کچھ بتاتا ہے تو وہ یہ کہ ناصبیت اور عقل کا دور دور تک کوئی واسطہ نہیں۔ یاد رہے کہ ہمارے مخالفین کا عقیدہ ہے کہ جناب عمار یاسر جیسے صحابہ شیعہ نہیں تھے۔ اگر ناصبی مصنف یہ ثابت کرنا چاہتا ہے کہ شمر اس وجہ سے شیعہ ہوا کہ وہ جنگ صفین میں حضرت علی کے ساتھ تھا تو کیا نواصب یہ ماننے پر راضی ہوجائنگے کہ صفین میں حضرت علی کے ہمراہ دیگر لوگ جن میں عمار یاسر جیسے صحابہ شامل میں وہ بھی شیعہ تھے؟ شیعہ ہونا صرف شمر کے لئے ہی کیوں ہو عمار یاسر جیسے صحابی کے لئے کیوں نہیں؟
در ِحقیقت جنگ صفین میں دو واضح گروہ تھے۔ ایک شیعان ِعلی اور دوسرا شیعان ِعثمان اور 'اہل ِسنت' نام کا وجود نہ تھا۔ لقب 'شیعہ' اس وقت ہر اس شخص کے لئے استعمال ہوتا تھا جو کہ حضرت علی کے خلافت کے زمانے میں ان کا حامی ہو اور ایسے لوگوں میں شامل تھے تمام وہ لوگ:
1۔ جو کہ اس کو شرعی فرض سمجھتے تھے کہ مولا علی کی نصرت و حمائت کریں کیونکہ وہ رسول اللہ کے بلافصل جانشیں تھے۔ جیسا کہ اس آرٹیکل کے ابتدائی حصہ میں تفصیل سے بیان کیا گیا کہ ایسا گروہ تعداد میں نہایت کم تھا جس کو آج آپ شیعہ اثنا عشری یا امامی شیعہ یا رافضی کہتے ہیں۔
2۔ جنہیں آج "اہلِ سنت" کہا جاتا ہے ، جو کہ حضرت علی کی حمائت اس نظریہ کے تحت کرتے تھے کہ وہ حضرت علی کو عثمان کے بعد چوتھا جائز خلیفہ تسلیم کرتےتھے اس لئے ان کے دشمنوں سے لڑے ۔ شاہ عبد العزیز دہلوی اپنی مشہور شیعہ مخالف کتاب میں لکھتے ہیں 
سب سے پہلے وہ مہاجرین و انصار اور تابعین اس لقب شیعہ سے منقلب تھے جو ہر پہلو میں حضرت مرتضیٰ کی اطاعت و پیروی کرتے تھے اور وقت ِ خلافت سے ہی آپ کی صحبت میں رہے ، آپ کے مخالفین سے لڑے اور آپ کے امر و نواہی کو مانتے رہے۔ انہی شیعہ کو مخلصین کہتے ہیں۔ ان کے اس لقب کی ابتدا 37 ہجری سے ہوئی 
تحفہ اثناء عشری (اردو) ، صفحہ 27 ، نور محمد کتب خانہ ، آرام باغ کراچی 
اب چونکہ شمر کو شیعہ ثابت کرنے کا درد نواصب کے پیٹ میں جاگا ہے، اس لئے یہ ثابت کرنے کی ذمہ داری بھی نواصب پر ہی عائد ہوتی ہے کہ شمر شیعہ کے اس گروہ میں سے تھا جو کہ حضرت علی کو رسول اللہ کا بلافصل جانشین تسلیم کرتا تھا، جسے آج رافضی یا امامی شیعہ کہتے ہیں تاکہ اس گروہ میں سے جو کہ حضرت علی کو عثمان کے بعد چوتھا جائز خلیفہ تسلیم کرتا تھا جسے آج اہل سنت کہتے ہیں (جہاں تک ہمارا سوال ہے، ہم ثابت کردینگے کہ وہ اس دوسرے شیعہ گروہ میں سے تھا) 

جواب نمبر 2:

انسان کی پہچان اس کے عقائد سے ہوتی ہے جن کی بنیاد پر وہ کوئی مخصوص عمل کرتا ہے نا کہ اس کے ماضی سے 

یہ عقل کی بات ہے کہ اگر کسی کو ایک شخص کے جرائم پر فیصلہ دینا ہو، تو ایسے شخص کے اس واقت کے عقائد کو مد ِنظر رکھا جائے گا جو اس وقت اس

شخص کے تھے جب اس نے جرائم کا ارتکاب کیا اور اس سلسلے میں اس کا ماضی غیرضروری ہو گا۔ اگر ایسا نہ ہو، تو کیا ہم درست ہونگے اگر ہم:

1۔ 'شیطانی آیات' کے مصنف سلمان رشدی
2۔ 'میں مسلمان کیوں نہیں ہوں؟' کے مصنف ابن ورق
3۔ فلم 'سبمشن' کے ہدایتکار عیان ھرسی علی
کو سنی مسلمان تسلیم کریں کونکہ اپنے اپنے ماضی میں یہ تمام لوگ سنی مذہب سے وابسطہ تھے؟

اسی طرح کیا ہم صحابہ کو بت پرست، زناکار، جواری و شرابی ہی تسلیم کرتے ہیں کیونکہ ماضی میں وہ ان حرکات و سکنات کو ارتکاب کیا کرتے تھے؟ نہیں۔ اسلام میں داخل ہونے کے بعد اب ان کے ماضی کا ذکر نہیں کیا جاتا اور صرف اسلام لانے کے بعد کے اعمال ہی کا حوالہ دیا جاتا ہے۔ 

اگر کچھ دیر کے لئے مان بھی لیا جائے کہ شمر کسی زمانے میں شیعہ تھا، تو دیکھنا یہ ہوگا کہ امام حسین کا سر تن سے جدا کرتے وقت اس کا کیا عقیدہ تھا۔ کیا وہ اس وقت شیعہ تھا؟ ہرگز نہیں۔ اس وقت وہ شیعان ِیزید میں سے تھا۔

اور اگر کچھ دیر کے لئے یہ بھی فرض کر لیا جائے کہ شمر عقیدتی یا امامی شیعہ گروہ میں سے تھا، تب بھی ہم نے اچھے اچھوں کو برا بنتے دیکھا ہی ہے۔ اس بابت ابلیس کی مثال موجود ہے جو کہ کسی زمانے میں اللہ کا شیعہ (پیروکار) تھا لیکن بعد میں اس نے اپنی علیحدہ جماعت بنالی۔ جنگ صفین میں حضرت علی کے ہمراہ لڑنے والے شیعوں میں سے ایک چھوٹا سا کارکن ہوگا لیکن ابلیس تو فرشتوں کی جماعت کا سردار تھا۔ کیا ہم اللہ کی پاک ذات کو متنازع بنانے کے لئے ابلیس کا ذکر کرتے ہیں کہ جو روش ابن الہاشمی نے اپنائی ہے؟

 

جواب نمبر 3: امام حسین کو قتل کرتے وقت کے عقائد شمر کو سنی ثابت کرتے ہیں نا کہ شیعہ 

امام ذہبی کی مشہور کتاب 'اعتدال المیزان' ج 2 ص 280 ترجمہ نمبر 3742 میں ہم پڑھتے ہیں:

ابو اسحاق نے کہا: 'شمر ہمارے ساتھ نماز پڑھتا اور کہتا: 'اے اللہ، تو جانتا ہے کہ میں شریف انسان ہوں، میری مغفرت فرما' ۔ میں نے اس سے کہا: 'تمہیں اللہ کیسے معاف کرسکتا ہے جبکہ تم نے اللہ کے رسول کے فرزند کو قتل کرنے میں حصہ لیا ہے؟'۔ اس نے کہا: 'مرو تم۔ مں اور کیا کرتا؟ ہمارے امراء نے ہمیں ایسا کرنے کا حکم دیا لہٰذا ہم نے ان کی نافرمانی نہیں کی، اگر ہم ان کی نافرمانی کرتے تو ہم جانور سے بھی بدتر ہوتے'۔ میں نے کہا: 'یہ تو ایک بھونڈا بہانہ ہے، اطاعت تو بس اچھی باتوں میں ہوتی ہے'۔  

جیسا کہ ہم نے پڑھا، شمر کا عقیدہ تھا کہ اپنے حکمرانوں کے احکام پر عمل کرتے ہوئے حسین کو قتل کرنا اس کا فرض تھا۔ نواصب کو چیلنج ہے کہ وہ یہ ثابت کردیں کہ شیعان ِعلی کا عقیدہ یہ تھا کہ حکمران کے حکم پر عمل کرتے ہوئے حسین کو قتل کرنا فرض ہے۔ وہ شیعہ جو یہ عقیدہ رکھتے ہیں کہ امامت اہل ِبیت کا وہ حق ہے جو انہیں اللہ تعالی نے دیا ہے ایسے شیعہ ہمیشہ سے ہی خود ساختہ خلافت و حکمرانی کو رد کرتے آئے ہیں اور یہ مانتے آئے ہیں کہ یہ حق صرف علی اور اولاد ِعلی میں سے ان کا ہے جنہیں اللہ تعالی نے چنا۔ ہم صرف اور صرف ان حضرات کی اطاعت کا عقیدہ رکھتے ہیں۔ اب ایسا شخص جو یہ عقیدہ رکھے کہ ناجائز حکمران کے حکم پر عمل کرتے ہوئے جائز امام کو قتل کرنا اس کا فرض ہے، وہ کسی بھی طرح سے (عقیدتی) شیعہ کے معنوں میں نہیں لیا جاسکتا۔ اس کے برعکس، ایک برے حکمران کی غیرمشروط اطاعت کرنے کا یہ عقیدہ اہل ِسنت والجماعت کا ضرور ہوسکتا ہے۔

شمر کے خود کے اعتراف سے ہم یہ دیکھ سکتے ہیں کہ جس وجہ سے شمر حضرت علی کا حامی تھا، بالکل اسی وجہ سے وہ یزید کا حامی بھی تھا۔ اور یہ وجہ وہ عقیدہ تھی جس کے مطابق حکمران ِوقت یا سربراہ ِمملکت کی اطاعت کرنی لازمی ہے کیونکہ وہ سربراہ ِمملکت ہے۔ شمر کے لئے صفین میں حضرت علی کی طرف داری کرنا اس لئے نہ تھا کو علی رسول اللہ کے بلافصل جانشیں اور امام ِوقت تھے، بلکہ اس لئے تھا کہ وہ خلیفہ تھے۔ جب یزید حکمران بن گیا، شمر نے یہی نظریہ دہرادیا ۔
 

جواب نمبر 4: 

سنی محدث کا شمر سے حدیث قبول کرنا شمر کے سنی عقیدہ کی سند ہے

مشہور و معروف تابعی اور اہل ِسنت کے عالم ِدین جناب ابو اسحاق السبیعی (المتوفی 129 ھ) کے لئے شمر کی ذات دینی معلومات حاصل کرنے کا ایک ذریعہ تھی یعنی شمر ان کے نزدیک ایک راوی ِحدیث کا درجہ رکھتا تھا۔ علامہ ابواسحاق کے متعلق امام ذہبی اپنی کتاب 'سیراعلام النبلاء' ج 5 ص 392 میں لکھتے ہیں:  

وہ کوفہ کے شیخ، عالم اور محدث تھے 

اپنی دوسری کتاب 'تذکرہ الحفاظ' ج 1 ص 114 میں لکھتے ہیں:
فضیل بن غزوان نے کہا ہے کہ ابواسحاق ہر تین روز میں ایک قرآن ختم کرتے تھے اور یہ کہا گیا ہے کہ وہ بہت زیادہ روزے رکھتا کرتے اور راتوں کو بہت زیادہ نماز پڑھا کرتےاور اپنی عزت کی حفاظت کرتے تھے۔ وہ علم کا منبہ تھے، ان کے کئی مناقب ہیں.
اب جب بم شمر کی سوانح پڑھتے ہیں تو ہمیں معلوم ہوتا ہے کہ سنی مذہب کے مندرجہ بالا شیخ، عالم ِدین و محدث، نیک و ایماندار انسان شمر کو اپنے مذہب کی کتابوں کا ایک راوی تسلیم کرتے تھے۔ امام ذہبی نے اپنی کتاب 'میزان الاعتدال' میں شمر کی سوانح میں لکھا:
وعنه أبو إسحاق السبيعي 

اور اس سے روایت کی ابواسحاق السبیعی نے
یہی وجہ ہے کہ اہل ِسنت مذہب میں بلند مقام رکھنے والی کتاب 'مسند احمد بن حنبل' میں موجود روایت کی سند میں اس لعنتی قاتل ِحسین کا نام ساتھ ہے۔

اب فیصلہ آپ لوگ خود کریں اس لعنتی کا عقیدہ کیا تھا؟

تبصرے

نام

ابن ابی حدید,2,ابنِ تیمیہ,8,ابن جریر طبری شیعہ,1,ابن حجر مکی,2,ابن خلدون,1,ابن ملجم لعین,1,ابو یوسف,1,ابوسفیان,1,ابومخنف,1,اجماع,2,احمد بن محمد عبدربہ,1,اعلی حضرت احمد رضا خان بریلوی,7,افطاری کا وقت,1,اللہ,4,ام المومنین ام سلمہ سلام علیھا,2,امام ابن جوزی,1,امام ابو زید المروزی,1,امام ابوجعفر الوارق الطحاوی,2,امام ابوحنیفہ,17,امام احمد بن حنبل,1,امام الزھبی,2,امام بخاری,1,امام جعفر صادق علیہ السلام,3,امام حسن علیہ السلام,11,امام حسین علیہ السلام,21,امام شافعی,5,امام علی رضا علیہ السلام,1,امام غزالی,3,امام مالک,3,امام محمد,1,امام مہدی عج,5,امامت,4,امداد اللہ مکی,1,اہل بیت علیھم السلام,2,اہل حدیث,16,اہل قبلہ,1,آذان,2,آن لائن کتابوں کا مطالعہ,23,آیت تطہیر,1,بریلوی,29,بریلوی اور اولیاء اللہ کے حالات,2,بنو امیہ,2,تبرا,8,تحریف قرآن,6,تراویح,2,تقابل ادیان و مسالک,33,تقيہ,2,تکفیر,3,جنازہ رسول اللہ,1,جنگ جمل,4,جنگ صفین,1,حافظ مبشر حسین لاہوری,1,حدیث ثقلین,5,حدیث طیر,1,حدیث غدیر,7,حدیث قرطاس,1,حضرت ابن عباس رض,3,حضرت ابو طالب علیہ السلام,5,حضرت ابوبکر,20,حضرت ابوزر غفاری رض,1,حضرت ام اکلثوم سلام علیھا,2,حضرت خدیجہ سلام علھیا,1,حضرت عائشہ بنت ابوبکر,14,حضرت عثمان بن عفان,7,حضرت علی علیہ السلام,64,حضرت عمار بن یاسر رض,3,حضرت عمر بن خطاب,23,حضرت عیسیٰ علیہ السلام,4,حضرت فاطمہ سلام علیھا,16,حضرت مریم سلام علیھا,1,حضرت موسیٰ علیہ السلام,2,حفصہ بنت عمر,1,حلالہ,1,خارجی,2,خالد بن ولید,1,خلافت,10,دورود,1,دیوبند,55,رافضی,3,رجال,5,رشید احمد گنگوہی,1,روزہ,3,زبیر علی زئی,7,زنا,1,زیاد,1,زیارات قبور,1,زيارت,1,سب و شتم,2,سجدہ گاہ,3,سرور کونین حضرت محمد ﷺ,14,سلیمان بن خوجہ ابراہیم حنفی نقشبندی,1,سلیمان بن عبد الوہاب,1,سنی کتابوں سے سکین پیجز,284,سنی کتب,6,سولات / جوابات,7,سیرت معصومین علیھم السلام,2,شاعر مشرق محمد اقبال,2,شاعری کتب,2,شجرہ خبیثہ,1,شرک,8,شفاعت,1,شمر ابن ذی الجوشن لعین,2,شیخ احمد دیوبندی,3,شیخ عبدالقادرجیلانی,1,شیخ مفید رح,1,شیعہ,8,شیعہ تحریریں,8,شیعہ عقائد,1,شیعہ کتب,18,شیعہ مسلمان ہیں,5,صحابہ,18,صحابہ پر سب و شتم,1,صحیح بخاری,5,صحیح مسلم,1,ضعیف روایات,7,طلحہ,1,عبادات,3,عبدالحق محدث دہلوی,1,عبداللہ ابن سبا,1,عبدالوہاب نجدی,2,عرفان شاہ بریلوی,1,عزاداری,4,علامہ بدرالدین عینی حنفی,1,علمی تحریریں,76,علیہ السلام لگانا,1,عمامہ,1,عمر بن سعد بن ابی وقاص,1,عمران بن حطان خارجی,2,عمرو بن العاص,3,غزوہ احد,1,غم منانا,12,فتویٰ,4,فدک,3,فقہی مسائل,17,فیض عالم صدیقی ناصبی,1,قاتلان امام حسینؑ کا مذہب,6,قاتلان عثمان بن عفان,1,قادیانی,3,قادیانی مذہب کی حقیقت,32,قرآن,5,کالا علم,1,کتابوں میں تحریف,5,کلمہ,2,لفظ شیعہ,2,ماتم,3,مباہلہ,1,متعہ,4,مرزا بشیر احمد قادیانی,2,مرزا حیرت دہلوی,2,مرزا غلام احمد قادیانی,28,مرزا محمود احمد,2,مسئلہ تفضیل,3,معاویہ بن سفیان,25,مغیرہ,1,منافق,1,مولانا عامر عثمانی,1,مولانا وحید الزماں,3,ناصبی,22,ناصر الدین البانی,1,نبوت,1,نماز,5,نماز جنازہ,2,نواصب کے اعتراضات کے جواب,72,واقعہ حرا,1,وسلیہ و تبرک,2,وصی رسول اللہ,1,وضو,3,وہابی,2,یزید لعنتی,14,یوسف کنجی,1,Requests,1,
rtl
item
شیعہ اہل حق ہیں: شمربن ذالجوشن شیعہ یا سنی ؟
شمربن ذالجوشن شیعہ یا سنی ؟
شمربن ذالجوشن شیعہ یا سنی ؟ 37 ھجری میں ہر وہ شخص جو حضرت علی کو جائز خلیفہ تسلیم کرتا اور ان کے دشمنوں سے لڑا وہ 'شیعہ' ہی کہلایا جاتا انسان کی پہچان اس کے عقائد سے ہوتی ہے جن کی بنیاد پر وہ کوئی مخصوص عمل کرتا ہے نا کہ اس کے ماضی سے امام حسین کو قتل کرتے وقت کے عقائد شمر کو سنی ثابت کرتے ہیں نا کہ شیعہ سنی محدث کا شمر سے حدیث قبول کرنا شمر کے سنی عقیدہ کی سند ہے
شیعہ اہل حق ہیں
https://www.shiatiger.com/2014/07/shimir.html
https://www.shiatiger.com/
https://www.shiatiger.com/
https://www.shiatiger.com/2014/07/shimir.html
true
7953004830004174332
UTF-8
تمام تحریرں دیکھیں کسی تحریر میں موجود نہیں تمام دیکھیں مزید مطالعہ کریں تبصرہ لکھیں تبصرہ حذف کریں ڈیلیٹ By مرکزی صفحہ صفحات تحریریں تمام دیکھیں چند مزید تحریرں عنوان ARCHIVE تلاش کریں تمام تحریرں ایسی تحریر موجود نہیں ہے واپس مرکزی صفحہ پر جائیں Sunday Monday Tuesday Wednesday Thursday Friday Saturday Sun Mon Tue Wed Thu Fri Sat January February March April May June July August September October November December Jan Feb Mar Apr May Jun Jul Aug Sep Oct Nov Dec just now 1 minute ago $$1$$ minutes ago 1 hour ago $$1$$ hours ago Yesterday $$1$$ days ago $$1$$ weeks ago more than 5 weeks ago Followers Follow THIS PREMIUM CONTENT IS LOCKED STEP 1: Share to a social network STEP 2: Click the link on your social network Copy All Code Select All Code All codes were copied to your clipboard Can not copy the codes / texts, please press [CTRL]+[C] (or CMD+C with Mac) to copy Table of Content